Home

Al Furqan Swat Honey in Pakistan is incredibly delicious and is a 100% purely natural source of sweetener collected by honey bees from the organic nectar of flowers grown in the wilds of the valley. The Al Furqan swat honey’s color, texture, and flavor greatly depend on which type of flower the nectar was collected from, also whether the source was natural or grown in the farms.

Most of the honey you find in grocery stores is pasteurized. The high heat kills unwanted yeast, can improve the color and texture, removes any crystallization, and extends the shelf life. Many of the beneficial nutrients are also destroyed in the process.

Our Promise

We follow all quality control measures to ensure our customers receive 100% natural and organic honey. Our honey is pure with no added ingredients or pasteurization. Moreover, our processes ensure that our bees feed on organically grown plants only, making our honey natural and organic.

AL Furqan Swat Honey is pure Honey which is extracted only from Honey Bees, we do not add any type of Sugar, Chemical etc.We only sell PURE Honey, if found any adulteration in Honey we will provide a Direct Refund to your Account.No Preservatives, No added sugar, Zero antibiotics, Unfiltered & Unpasteurized Honey.

Pakistan Standards 

AL Furqan honey produce by Natural Swat Bee Honey company is fresh from the remote regions of Swat, Pakistan. NSBH is also proud to be a certified company by Pakistan Standards and Quality Control Authority. [License Number: CM-L3740/2018(R)

CERTIFIED BY PSQC

شہد کے فوائد

جدید طب (ایلو پیتھی سسٹم آف میڈیسن ) کی بنیادہی نظریہ جراثیم پر ہے ۔شہد جراثیم کش ہونے کے باعث نہ صرف جراثیمی امراض سے محفوظ رکھتا ہے بلکہ اس میں کسی قسم کے جراثیم زندہ نہیں رہ سکتے ۔شہد کی ایک خصوصیت یہ بھی ہے کہ یہ سڑتا نہیں ہے بلکہ دوسری چیز میں آمیز ہو کر اس کو بھی سڑنے سے بچاتا ہے ۔

شفاف جلد

شہد ایک زبردست اینٹی آکسائیڈنٹ ہے یعنی اسے کھانا معمول بنالینا جسم سے بیشتر زہریلے مواد کے اخراج میں مدد دیتا ہے جبکہ اس کی جراثیم کش خصوصیات جلد کو شفاف اور بہتر بنانے میں مدد دیتی ہیں۔

جسمانی وزن میں کمی

اگر آپ بڑھتے وزن سے پریشان ہیں، تو طبی ماہرین کا مشورہ ہے کہ چینی سے بنے میٹھے پکوانوں کو غذا سے نکال دیں، بلکہ شہد کو شامل کرلیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ شہد میں موجود مٹھاس چینی سے مختلف ہوتی ہے جو کہ میٹابولزم کو بہتر بناتی ہے اور جسمانی وزن میں کمی کے لیے بہت ضروری ہے۔

کولیسٹرول لیول میں کمی

شہد میں کولیسٹرول نہیں ہوتا، بلکہ یہ ایسے اجزاء اور وٹامنز سے بھرپور ہے جو صحت کے لیے نقصان دہ کولیسٹرول کی سطح میں کمی لاتے ہیں۔ روزانہ شہد کھانا ایسے اینٹی آکسائیڈنٹس اجزاء کی سطح برقرار رکھنے کے لیے فائدہ مند ثابت ہوتا ہے جو اضافی کولیسٹرول سے لڑتے ہیں۔

صحت مند دل

طبی تحقیقی رپورٹس سے ثابت ہوا ہے کہ شہد میں موجود اینٹی آکسائیڈنٹس شریانوں کو سکڑنے سے بچاتے ہیں، شریانوں کا سکڑنا حرکت قلب روکنے، یادداشت خراب ہونے یا سردرد کا باعث بنتا ہے، تاہم روزانہ ایک گلاس پانی کے ساتھ 2 سے 3 چمچ شہد کا استعمال اس سے بچانے کے لیے موثر ثابت ہوتا ہے۔

بہتر یادداشت

کچھ طبی تحقیقی رپورٹس میں شہد کی ذہنی تناﺅ سے لڑنے کی صلاحیت کو ثابت کیا گیا ہے جو ایسے دفاعی نظام کو بحال کرتی ہے جو یادداشت کو بہتر بنانے میں مددگار ہے۔ اس سے ہٹ کر شہد میں موجود کیلشیئم دماغ میں آسانی سے جذب ہوجاتا ہے جو کہ دماغی افعال پر فائدہ مند اثرات مرتب کرتا ہے۔

اچھی نیند

شہد میں موجود مٹھاس خون میں انسولین کی سطح بڑھاتی ہے جس سے ایک کیمیکل سیروٹونین خارج ہوتا ہے جو کہ میلاٹونین نامی ہارمون میں تبدیل ہوجاتا ہے، جو اچھی نیند کے لیے ضروری ہوتا ہے۔

معدے کے لیے فائدہ مند

جراثیم کش ہونے کی وجہ سے خالی پیٹ ایک چمچ شہد کو کھانا متعدد ایسے امراض سے تحفظ دیتا ہے جو نظام ہضم سے جڑے ہوتے ہیں۔ معدے تک جاتے ہوئے شہد جراثیموں کو ختم کرکے جسم کے اندر چھوٹے زخموں کو بھی بھر دیتا ہے۔

گلے کی تکلیف میں راحت

کھانسی کی روک تھام کے ساتھ ساتھ شہد ایک ایسے جراثیم کش محلول کا کام بھی سرانجام دیتا ہے جو گلے کی تکلیف میں فائدہ پہنچا سکتا ہے۔ آدھا کپ پانی میں ایک چائے کا چمچ چھلی ہوئی ادرک، ایک یا دو لیموں کا عرق اور ایک چائے کا چمچ شہد کو مکس کریں، اس مکسچر سے غرارے کرنا گلے کی تکلیف میں کمی لاسکتا ہے۔

سر کی خشکی کو دور کرے

شہد سے بال دھونا سر کی خشکی سے نجات دلا سکتا ہے، اس کے استعمال سے سر کی نمی بحال ہوتی ہے جس سے خشکی کا امکان کم ہوجاتا ہے۔ سر کی خشکی سے نجات کے لیے پتلے شہد کو ہلکے سے گرم پانی میں مکس کریں اور پھر سر پر اس کی دو سے تین منٹ تک مالش کریں۔

ذیابیطس

ذیابیطس کے مریض کو میٹھی اشیاء کے استعمال سے احتیاط کا مشورہ دیا جاتا ہے لیکن شہد ان کو بھی نقصان نہیں دیتا۔ اللہ تعالیٰ نے انسان کو جتنی نعمتیں عطا فرمائی ہیں ان میں شہد اور دودھ کو اہمیت حاصل ہے ۔

شہد شوگر، بلڈ پریشر، موٹاپا، کڈنی کے کینسر، ہیپاٹائٹس سی، آنکھوں اور دیگر امراض میں سالہاسال سے استعمال ہورہا ہے۔

No products were found matching your selection.